عشقِ رسول

میڈا عشق وی توں میڈا یار وی توں
میڈا دین وی توں میڈا ایمان وی توں
میڈا جسم وی توں میڈا روح وی توں
میڈا قلب وی توں،جند جان وی توں
میڈا کعبہ قبلہ مسجد ممبر مُصحف تے قرآن وی توں
میڈے فرض فریضے حج زکوٰتاں صوم صلاۃ اذان وی توں
میڈا ذکر وی توں میڈا فکر وی توں
میڈا ذوق وی توں وجدان وی توں
میڈا سانول مٹھڑا شام سلونڑا من موہن جانان وی توں
میڈا مرشد ھادی پیر طریقت شیخ حقائق دان وی توں
میڈی آس امید تے کھٹیا وٹیا تکیہ مانڑ تے ترانڑ وی توں
میڈا دھرم وی توں میڈا بھرم وی توں
میڈی شرم وی توں میڈی شان وی توں
میڈا ڈُکھ سُکھ رووَنڑ کھلنڑ وی توں
میڈا درد وی توں درمان وی توں
میڈا خوشیاں دا اسباب وی توں
میڈے سولاں دا سامان وی توں
میڈا حُسن تے بھاگ سُہاگ وی توں
میڈا بخت تے نام و نشان وی توں

کلام ۔ خواجہ غلام فرید

This entry was posted in شاعری on by .

About افتخار اجمل بھوپال

رہائش ۔ اسلام آباد ۔ پاکستان ۔ ۔ ۔ ریاست جموں کشمیر کے شہر جموں میں پیدا ہوا ۔ پاکستان بننے کے بعد ہجرت پر مجبور کئے گئے تو پاکستان آئے ۔انجنئرنگ کالج لاہور سے بی ایس سی انجنئرنگ پاس کی اور روزی کمانے میں لگ گیا۔ ملازمت کے دوران اللہ نے قومی اہمیت کے کئی منصوبے میرے ہاتھوں تکمیل کو پہنچائے اور کئی ملکوں کی سیر کرائی جہاں کے باشندوں کی عادات کے مطالعہ کا موقع ملا۔ روابط میں "میں جموں کشمیر میں" پر کلِک کر کے پڑھئے میرے اور ریاست جموں کشمیر کے متعلق حقائق جو پہلے آپ کے علم میں شائد ہی آئے ہوں گے ۔ ۔ ۔ دلچسپیاں ۔ مطالعہ ۔ مضمون نویسی ۔ خدمتِ انسانیت ۔ ویب گردی ۔ ۔ ۔ پسندیدہ کُتب ۔ بانگ درا ۔ ضرب کلِیم ۔ بال جبریل ۔ گلستان سعدی ۔ تاریخی کُتب ۔ دینی کتب ۔ سائنسی ریسرچ کی تحریریں ۔ مُہمْات کا حال

11 thoughts on “عشقِ رسول

  1. حکیم خالد

    سبحان اللہ

    انکل اجمل۔۔۔۔۔۔
    پٹھانے خان کی آواز میں خواجہ غلام فرید کا یہ کلام ایک عجیب وجدانی کیفیت پیدا کر دیتا ہے۔۔۔۔۔۔۔

  2. افتخار اجمل بھوپال Post author

    حکيم خالد صاحب
    کيا خوب ياد کريا آپ نے ۔ کسی زمانے ميں ميں ريڈيو سے پٹھانے خان کی آواز ميں خواجہ فريد کا کلام سُنا کرتا تھا اور بہت لُطف آتا تھا ۔ اب جب بھی ميں اسے پڑھتا ہوں تو ميرے کانوں ميں پٹھانے خان کی آواز گونج رہی ہوتی ہے

  3. حارث گلزار

    زبردست!۔ میں بھی پٹھانے خان کی ہی تعریف کرنے آیا تھا مگر انکا ذکر پہلے ہی ہوگیا۔ پٹھانے خان کی آواز نے اس کلام کو مزید خوبصورت بنا دیا ہے!!!

  4. جاویداقبال

    السلام علیکم ورحمۃ وبرکاتہ،

    افتخاربھائي، کیاخوب کلام ہے۔ ہمارےصوفی شعراء کاکلام پڑھنےسےایک عجیب ساروحانی وجدطاری ہوجاتاہے۔ اللہ تعالی ان کواپنےجواررحمت میں جگہ دے۔ آمین ثم آمین

    والسلام
    جاویداقبال

  5. محمد ریاض شاہد

    اس کلام کے خالق خواجہ غلام فرید (1901۔1844) کا کلام عشق مجازی کے تجربے کی دلالت کرتا ہے ۔ ان کی کافیوں میں انسانی حوالوں کے ساتھ عشق کی درماندگیاں ، ہجر کا سوز ، وصال کی آرزو ، انتظار کا کرب ، محبوب کی جفا ء بے نیازی اور ستم پسندی کے تذکرے جا بجا ملتے ہیں ۔ لیکن اگر ان کے کلام کو بغور پڑھا جائے تو معلوم ہوتا ہے کہ ان کا عشق محض عشق مجاز نہ تھا بلکہ اس نے اطلاق کا رنگ بھی اختیار کر لیا تھا ۔ پوری کائنات میں سمٹ آتی تھی اور اس نے ان کے حوالہ جاتی نظام کو یکسر تبدیل کر کے رکھ دیا تھا ۔
    بحوالہ
    http://pcduniya.wordpress.pk/2009/02/

  6. افتخار اجمل بھوپال Post author

    حارث گلزار ۔ جاويد اقبال ۔ جاويد گوندل اور محمد رياض صاحبان
    آپ سب کے خيالات درست ہيں ۔ مزيد ميں جس چيز کو اُجاگر کرنا چاہتا ہوں يہ ہے کہ آج کم از کم آدھی صدی پيچھے کی دنيا کو موازنہ عصرِ حاضر جسے ترقی يافتہ دور کہا جاتا ہے سے کيا جائے تو ايک نماياں فرق ملتا ہے کہ ماضی ميں خلوص و عمل تھا اور عصرِ حاضر ميں لفاظی اور منافقت ہے

  7. انکل ٹام

    میں تو کچھ کمنٹ لکھ رہا تھا لیکن الفاظ پہنچے نہیں‌ صرف نمبر پہنچ گئے ۔
    ویسے 10 نمبر دونوں کے لیے ہیں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

:wink: :twisted: :roll: :oops: :mrgreen: :lol: :idea: :evil: :cry: :arrow: :?: :-| :-x :-o :-P :-D :-? :) :( :!: 8-O 8)