قیمت ؟

ایک شخص نے بسترِ مرگ پر اپنے بیٹے کو کہا ”یہ گھڑی تمہارے دادا نے مجھے دی تھی ۔ یہ 200 سال پرانی ہے لیکن قبل اس کے کہ میں تمہیں یہ گھڑی دوں تم گھڑیوں کی دکان پر جا کر اُسے پوچھو کہ یہ گھڑی کتنے میں بِکے گی ؟ اور واپس آ جاؤ“۔
بیٹا گیا اور واپس آ کر باپ کو بتایا کہ وہ کہتا ہے بہت پرانی ہے 50 روپے سے زیادہ میں نہیں بِکے گی
باپ نے کہا ” اب چائے والے کے پاس جاؤ اور معلوم کرو وہ کتنے پیسے دیتا ہے ؟“
بیٹا گیا اور واپس آ کر بتایا کہ وہ بھی 50 روپے دیتا ہے
باپ نے کہا ”عجائب گھر کے مُہتمم کے پاس جا کر پوچھو“۔
بیٹا ہو کر واپس آیا ۔ اُس کے چہرے پر حیرانی عیاں تھی ۔ آتے ہی بولا ” ابا جی ۔ وہ اِس کے 50 لاکھ روپے دینے کو تیار ہے“۔
باپ بولا ”بیٹا ۔ میں تمہیں یہی سمجھانا چاہتا تھا کہ ہر چیز کی قیمت اُس کی درست جگہ پر ہوتی ہے ۔ کبھی اپنے آپ کو غلط مقام پر نہ رکھنا کہ پھر غصہ ہی کھاتے رہو ۔ آپ کی قیمت وہ جانتا ہے جو آپ کے اچھے کام کی تعریف کرتا ہے ۔ اس لئے ہمیشہ ایسی جگہ رہو جہاں اچھائی کی قدر کی جاتی ہو“

This entry was posted in روز و شب, طور طريقہ, معلومات on by .

About افتخار اجمل بھوپال

رہائش ۔ اسلام آباد ۔ پاکستان ۔ ۔ ۔ ریاست جموں کشمیر کے شہر جموں میں پیدا ہوا ۔ پاکستان بننے کے بعد ہجرت پر مجبور کئے گئے تو پاکستان آئے ۔انجنئرنگ کالج لاہور سے بی ایس سی انجنئرنگ پاس کی اور روزی کمانے میں لگ گیا۔ ملازمت کے دوران اللہ نے قومی اہمیت کے کئی منصوبے میرے ہاتھوں تکمیل کو پہنچائے اور کئی ملکوں کی سیر کرائی جہاں کے باشندوں کی عادات کے مطالعہ کا موقع ملا۔ روابط میں "میں جموں کشمیر میں" پر کلِک کر کے پڑھئے میرے اور ریاست جموں کشمیر کے متعلق حقائق جو پہلے آپ کے علم میں شائد ہی آئے ہوں گے ۔ ۔ ۔ دلچسپیاں ۔ مطالعہ ۔ مضمون نویسی ۔ خدمتِ انسانیت ۔ ویب گردی ۔ ۔ ۔ پسندیدہ کُتب ۔ بانگ درا ۔ ضرب کلِیم ۔ بال جبریل ۔ گلستان سعدی ۔ تاریخی کُتب ۔ دینی کتب ۔ سائنسی ریسرچ کی تحریریں ۔ مُہمْات کا حال

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

:wink: :twisted: :roll: :oops: :mrgreen: :lol: :idea: :evil: :cry: :arrow: :?: :-| :-x :-o :-P :-D :-? :) :( :!: 8-O 8)