تُسی کی کِیتا

اگر آپ کے کمپیوٹر پر ریئل پلیئر انسٹال ہے تو آگے بڑھیئے ورنہ پہلے یہاں کلک کر کے ریئل پلیئر ڈاؤن لوڈ کر کے انسٹال کر لیجئے

اب اپنے کمپیوٹر کے سپیکر آن کر دیجئے

پھر نیچے دیئے گئے ربط پر کلک کرنے کے بعد ریئل پلیئر کے ذریعہ وِڈیو چلایئے
اور غور سے سُنیئے کہ ”بی مانو“ میرا کیا پیغام آپ کو دے رہی ہے

VID-20130214-WA0001

۔
۔
۔

قارئین کی فرمائش پر اُردو ترجمہ بھی لکھ دیا ہے

تُسی دُور گئے اَسی یاد کِیتا ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ آپ دُور گئے تو میں نے یاد کِیا
تُسی کول آئے اَسی پیار کِیتا ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ آپ پاس آئے تو میں نے پیار کِیا
تُسی رُس گئے اَسی راضی کِیتا ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ آپ خفا ہوئے تو میں نے منایا
تُسی یاد آئے اَسی مِس کِیتا ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ آپ یاد آئے تو میں نے مِس (miss) کِیا
مِس کِیتا راضی کِیتا پیار کِیتا یاد کِیتا ۔ ۔ مِس کِیا منایا پیار کِیا یاد کِیا
سب کُج اسی کِیتا ۔ تُسی کی کِیتا ؟ ۔ ۔ ۔ ۔ سب کچھ میں نے کِیا ۔ آپ نے کیا کِیا

میرا انگریزی میں بلاگ ”حقیقت اکثر تلخ ہوتی ہے ۔ Reality is Often Bitter“ گذشتہ ساڑھے 8 سال سے معاشرے کے مختلف پہلوؤں پر تحاریر سے بھرپور چلا آ رہا ہے اور قاری سے صرف ایک کلِک کے فاصلہ پر ہے ۔ دنیا کے معاملات پر نظر رکھنے والے لکھاریوں کے مندرجہ ذیل مضامین باری باری کلک کر کے پڑھیئے
Barak Obama’s Tears by George Monbiot
Sanctions on Iran by Brian Cloughley
Palestine and US Humbug by Brian Cloughley

This entry was posted in پيغام on by .

About افتخار اجمل بھوپال

رہائش ۔ اسلام آباد ۔ پاکستان ۔ ۔ ۔ ریاست جموں کشمیر کے شہر جموں میں پیدا ہوا ۔ پاکستان بننے کے بعد ہجرت پر مجبور کئے گئے تو پاکستان آئے ۔انجنئرنگ کالج لاہور سے بی ایس سی انجنئرنگ پاس کی اور روزی کمانے میں لگ گیا۔ ملازمت کے دوران اللہ نے قومی اہمیت کے کئی منصوبے میرے ہاتھوں تکمیل کو پہنچائے اور کئی ملکوں کی سیر کرائی جہاں کے باشندوں کی عادات کے مطالعہ کا موقع ملا۔ روابط میں "میں جموں کشمیر میں" پر کلِک کر کے پڑھئے میرے اور ریاست جموں کشمیر کے متعلق حقائق جو پہلے آپ کے علم میں شائد ہی آئے ہوں گے ۔ ۔ ۔ دلچسپیاں ۔ مطالعہ ۔ مضمون نویسی ۔ خدمتِ انسانیت ۔ ویب گردی ۔ ۔ ۔ پسندیدہ کُتب ۔ بانگ درا ۔ ضرب کلِیم ۔ بال جبریل ۔ گلستان سعدی ۔ تاریخی کُتب ۔ دینی کتب ۔ سائنسی ریسرچ کی تحریریں ۔ مُہمْات کا حال

4 thoughts on “تُسی کی کِیتا

  1. نورمحمد

    محترم ۔ ۔ ۔

    دیکھ بھی لیا اور پڑھ بھی لیا۔۔۔

    مگر کیا آپ اردو ترجمہ کی بھی زحمت اٹھا سکتے ہیں ۔ ۔۔ ( فرصت ہو تو ۔ ۔۔ جناب ۔(

    شکریہ :wink: :wink: :wink:

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

:wink: :twisted: :roll: :oops: :mrgreen: :lol: :idea: :evil: :cry: :arrow: :?: :-| :-x :-o :-P :-D :-? :) :( :!: 8-O 8)