احوالِ قوم ۔ 6 ۔ روّيہ

اگر ہم سے مانگے کوئی ایک پیسا۔ ۔ ۔ ۔ ۔ تو ہوگا کم وبیش بار اس کا دینا
مگر ہاں وہ سرمایہءِ دین و دنیا۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ کہ ایک ایک لمحہ ہے اَنمول جس کا
نہیں کرتے خسّت اُڑانے میں اس کے۔ ۔ ۔ بہت ہم سخی ہیں لُٹانے میں اس کے
اگر سانس دن رات کے سب گنیں ہم۔ ۔ ۔ تو نکلیں گے انفاز ایسے بہت کم
کہ ہو جن میں کل کیلئے کچھ فراہم۔ ۔ یونہی گزرے جاتے ہیں دن رات پیہم
نہیں کوئی گویا خبردار ہم میں۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ کہ یہ سانس آخر ہیں اب کوئی دم میں
گڈریئے کا وہ حُکم بردار کُتا۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ کہ بھیڑوں کی ہر دَم ہے رکھوال کرتا
جو ریوڑ میں ہوتا ہے پتّے کا کھڑکا۔ ۔ ۔ ۔ تو وہ شیر کی طرح پھرتا ہے بھِپرا
گر انصاف کیجئے تو ہے ہم سے بہتر۔ ۔ کہ غافل نہیں فرض سے اپنے دم بھر

بہت لوگ بن کے ہوا خواہِ امت ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ سفیہوں سے منوا کے اپنی فضیلت
سدا گاؤں درگاؤں نوبت بہ نوبت ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ پڑے پھرتے ہیں کرتے تحصیلِ دولت
یہ ٹھہرے ہیں اسلام کے رہنما اب ۔ ۔ ۔ لقب ان کا ہے وارثِ انبیا اب
بہت لوگ پیروں کی اولاد بن کر ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ نہیں ذات والا میں کچھ جن کے جوہر
بڑا فخر ہے جن کو لے دے کے اس پر ۔ ۔ کہ تھے ان کے اسلاف مقیولِ داور
کرشمے ہیں جاجا کے جھوٹے دکھاتے ۔ مریدوں کو ہیں لوٹتے اور کھاتے

اقتباس از مسدسِ حالی
مصنف ۔ خواجہ الطاف حسين حالی

This entry was posted in روز و شب, شاعری, معاشرہ on by .

About افتخار اجمل بھوپال

رہائش ۔ اسلام آباد ۔ پاکستان ۔ ۔ ۔ ریاست جموں کشمیر کے شہر جموں میں پیدا ہوا ۔ پاکستان بننے کے بعد ہجرت پر مجبور کئے گئے تو پاکستان آئے ۔انجنئرنگ کالج لاہور سے بی ایس سی انجنئرنگ پاس کی اور روزی کمانے میں لگ گیا۔ ملازمت کے دوران اللہ نے قومی اہمیت کے کئی منصوبے میرے ہاتھوں تکمیل کو پہنچائے اور کئی ملکوں کی سیر کرائی جہاں کے باشندوں کی عادات کے مطالعہ کا موقع ملا۔ روابط میں "میں جموں کشمیر میں" پر کلِک کر کے پڑھئے میرے اور ریاست جموں کشمیر کے متعلق حقائق جو پہلے آپ کے علم میں شائد ہی آئے ہوں گے ۔ ۔ ۔ دلچسپیاں ۔ مطالعہ ۔ مضمون نویسی ۔ خدمتِ انسانیت ۔ ویب گردی ۔ ۔ ۔ پسندیدہ کُتب ۔ بانگ درا ۔ ضرب کلِیم ۔ بال جبریل ۔ گلستان سعدی ۔ تاریخی کُتب ۔ دینی کتب ۔ سائنسی ریسرچ کی تحریریں ۔ مُہمْات کا حال

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

:wink: :twisted: :roll: :oops: :mrgreen: :lol: :idea: :evil: :cry: :arrow: :?: :-| :-x :-o :-P :-D :-? :) :( :!: 8-O 8)