صيہونی بمقابلہ نازی

نام نہاد ہالوکاسٹ کا راگ الاپنے والے صيہونیوں نے نازيوں سے بچ نکلنے کے بعد جن اولادوں کو جنم ديا اُنہوں نے فلسطينيوں کے ساتھ پچھلے 62 سال سے جو ظُلم روا رکھا ہے اگر آج ہٹلر دوبارہ پيدا ہو جائے تو يہ مناظر ديکھ کر اپنا سر پيٹے کہ اس قوم کی وہ نسل کُشی کر ہی ديتا تو دنيا امن و سکون سے رہتی
اسرائيل کا ظُلم فلسطينيوں پر ۔ ۔ ۔ نازيوں کا ظُلم يورپی يہوديوں پر

نيچے بائيں طرف کی تصوير ميں يہوديوں نے دکھايا ہے کہ نازی بچہ يہوديوں کا مذاق اُڑاتا تھا جبکہ داہنی تصوير ميں يہودی اسرائيلی بچوں کو دعوت دی گئی کہ وہ فلسطينيوں پر چلائے جانے کيلئے تيار گولوں پر اپنے پيغامات لکھيں

نيچے کی دو تصاوير ميں بائيں طرف والی ايک ہی تصوير ہے ۔ يہ تصوير پورے امريکہ اور کئی يورپی ممالک کی تاريخ کی کتابوں ۔ انسائيکلوپيڈيا ۔ لائبريريوں اور عجائب گھروں ميں ديکھنے کو ملتی ہے کہ نازيوں نے يہودی بچے کو بھی ہينڈز اَپ کرايا ۔ اس ايک تصوير کے مقابلہ ميں داہنی طرف دو مختلف فلسطينی بچوں کی تصاوير ہيں جن ميں اسرائيل کا گھناؤنا کردار واضح ہے

This entry was posted in تاریخ, سیاست, منافقت on by .

About افتخار اجمل بھوپال

رہائش ۔ اسلام آباد ۔ پاکستان ۔ ۔ ۔ ریاست جموں کشمیر کے شہر جموں میں پیدا ہوا ۔ پاکستان بننے کے بعد ہجرت پر مجبور کئے گئے تو پاکستان آئے ۔انجنئرنگ کالج لاہور سے بی ایس سی انجنئرنگ پاس کی اور روزی کمانے میں لگ گیا۔ ملازمت کے دوران اللہ نے قومی اہمیت کے کئی منصوبے میرے ہاتھوں تکمیل کو پہنچائے اور کئی ملکوں کی سیر کرائی جہاں کے باشندوں کی عادات کے مطالعہ کا موقع ملا۔ روابط میں "میں جموں کشمیر میں" پر کلِک کر کے پڑھئے میرے اور ریاست جموں کشمیر کے متعلق حقائق جو پہلے آپ کے علم میں شائد ہی آئے ہوں گے ۔ ۔ ۔ دلچسپیاں ۔ مطالعہ ۔ مضمون نویسی ۔ خدمتِ انسانیت ۔ ویب گردی ۔ ۔ ۔ پسندیدہ کُتب ۔ بانگ درا ۔ ضرب کلِیم ۔ بال جبریل ۔ گلستان سعدی ۔ تاریخی کُتب ۔ دینی کتب ۔ سائنسی ریسرچ کی تحریریں ۔ مُہمْات کا حال

5 thoughts on “صيہونی بمقابلہ نازی

  1. محمد رضوان

    اسلام علیکم۔ انکل جی آپ کا بلاگ کافی دنوں بعد آج کھلا ہے۔آپ نے نام نہاد ہالوکاسٹ کا لفظ استعمال کیا ہے ۔کیا ہولوکاسٹ جیسا کوئی واقعہ ہوا بھی ہے یا یہ یہودی کی خود کو معصوم ظاہر کرنے کی کوئی سازش تھی۔ مجھے تو یہ ایک ڈرامہ لگتا ہے جس کا حقیقت سے کوئی تعلق نہیں ۔ میرے خیال میں تو اگر ہٹلر نے یہودی مرائے بھی ہوئے تو اتنی تعداد میں نہیں ھوں گے جتنی تعداد بتائی جاتی ہے ۔ مجھے تو یہ بڑھا چڑھا کر بیان کی گئی کہانی لگتی ہے آپ کے خیال میں حقیقت کیا ھوسکتی ہے

  2. جاویداقبال

    السلام علیکم ورحمۃ وبرکاتہ،
    بالکل رضوان بھائی،یہی بات ہےایسی کوئی بھی بات نہیں لیکن کیاکریں کہ میڈیایہودیوں کےزیرتسلط ہےتووہ جوچاہیے کرشمہ نوازیاں کریں۔ کوئی ان کوپوچھنےوالانہیں۔ اجمل بھائی، یہ چیزیں انسانیت کےٹھیکیداروں کونظرنہیں آتی کیونکہ انکی آنکھوں پرمسلمانوں کی دشمنی کی پٹی چڑھی ہوئي ہے۔
    والسلام
    جاویداقبال

  3. محمد طارق راحیل

    سب ڈرامہ ڈھونگ اور ڈھکوسلہ ہے
    مسلمانوں میں بے خبری پھلائی جا رہی ہے اور واقعی مسلمان ہیں ہی بے خبر اور نیند میں
    جان کر بھی انجان بنے بیٹھے ہیں
    اور یہ یہودی جن کے بارے مین قراں تک ان کو دشمن قرار دیتا ہے ان کو دوست مانتے ہین ہم
    کاش کہ ہوش کے ناخن لین سب

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

:wink: :twisted: :roll: :oops: :mrgreen: :lol: :idea: :evil: :cry: :arrow: :?: :-| :-x :-o :-P :-D :-? :) :( :!: 8-O 8)