ايک خيال

کہتے ہيں کہ ميرے ہموطن بہت ذہين ہوتے ہيں اور بڑے بڑے معرکے سر کر ليتے ہيں گو مجھے سوائے مال کمانے کے کچھ نظر نہيں آيا

کوپن ہیگن [ڈنمارک] میں قائم ایک Five Star Hotel, Crowne Plaza نے اپنے مہمانوں کو پیشکش کی ہے کہ 15 منٹ تک ورزشی سائیکل کی پیڈلنگ کرنے پر انہیں 36 ڈالر تک مفت کھانے کی سہولت حاصل ہو گی ۔ سائیکل چلانے والے اپنا موٹاپا ۔ کوليسٹرال اور شوگر کم کرنے کے ساتھ کھانا بھی مفت کھا سکتے ہيں

کتنی اچھی پيشکش ہے ؟

دراصل اس ہوٹل نے ماحول دوست بجلی پیدا کرنے کا طریقہ کار اپناتے ہوئے ان ورزشی سائیکلوں کے ساتھ جنریٹر منسلک کئے ہوئے ہیں جو بجلی پیدا کرتے ہیں ۔ ايک آدمی 15 منٹ سائيکل چلا کر 10 watt-hour بجلی پيدا کرتا ہے يعنی ايک سائيکل سے ايک گھنٹہ ميں 40 watt-hour بجلی حاصل کی جا سکتی ہے ۔ اس طریقہ کار کے ذریعے ماحو ل کاربن ڈائی آکسائیڈ سے محفوظ رہیگا

يہ طريقہ ہمارے مُلک کی اہم ضرورت ہے پھر کيوں ہمارے ہاں ايسا خيال کسی کو نہيں آتا ؟

This entry was posted in روز و شب on by .

About افتخار اجمل بھوپال

رہائش ۔ اسلام آباد ۔ پاکستان ۔ ۔ ۔ ریاست جموں کشمیر کے شہر جموں میں پیدا ہوا ۔ پاکستان بننے کے بعد ہجرت پر مجبور کئے گئے تو پاکستان آئے ۔انجنئرنگ کالج لاہور سے بی ایس سی انجنئرنگ پاس کی اور روزی کمانے میں لگ گیا۔ ملازمت کے دوران اللہ نے قومی اہمیت کے کئی منصوبے میرے ہاتھوں تکمیل کو پہنچائے اور کئی ملکوں کی سیر کرائی جہاں کے باشندوں کی عادات کے مطالعہ کا موقع ملا۔ روابط میں "میں جموں کشمیر میں" پر کلِک کر کے پڑھئے میرے اور ریاست جموں کشمیر کے متعلق حقائق جو پہلے آپ کے علم میں شائد ہی آئے ہوں گے ۔ ۔ ۔ دلچسپیاں ۔ مطالعہ ۔ مضمون نویسی ۔ خدمتِ انسانیت ۔ ویب گردی ۔ ۔ ۔ پسندیدہ کُتب ۔ بانگ درا ۔ ضرب کلِیم ۔ بال جبریل ۔ گلستان سعدی ۔ تاریخی کُتب ۔ دینی کتب ۔ سائنسی ریسرچ کی تحریریں ۔ مُہمْات کا حال

5 thoughts on “ايک خيال

  1. افتخار اجمل بھوپال Post author

    فارغ صاحب
    تمام کسان کم از کم اپنے ٹيوب ويل ہی اس طرح چلا ليں تو روزانہ کی بک بک سے بچ جائيں گے ۔ کاش ہمارے اربابِ اختيار پر بھی اس کا کچھ اثر ہو

  2. جاویداقبال

    السلام علیکم ورحمۃ وبرکاتہ،
    بجلی پیداکرنےکابہت اچھاآئیڈیاہے۔ لیکن اس پرکم وبیش کتنی لاگت آتی ہے۔ یہ بھی تفیصل بتائیں تودیکھیں کہ کیاچیز ہے

    والسلام
    جاویداقبال

  3. افتخار اجمل بھوپال Post author

    جاويد اقبال صاحب
    لاگت کا اندازہ تو مجھے نہيں ہے اور مختلف علاقوں ميں مختلف ہو گا ۔ اوپر فارغ صاحب نے ايک وڈيو لگائی ہے جو منصوبہ بندی کی بنياد بن سکتی ہے

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

:wink: :twisted: :roll: :oops: :mrgreen: :lol: :idea: :evil: :cry: :arrow: :?: :-| :-x :-o :-P :-D :-? :) :( :!: 8-O 8)