بلاگ سپاٹ امتحان

مُجھے 3 مارچ کو اپنے دونوں بلاگ کھولنے میں دقت ہوئی تھی اُس کے بعد نہیں ہوئی ۔ میں نے آج دوپہر وہ سارے بلاگ سپاٹ کے بلاگ براہِ راست کھولنے شروع کئے جن کے یو آر ایل میرے پاس ہیں ۔ چنانچہ 27 کے 27 بلاگ براہِ راست بغیر کسی دقت کے کھُل گئے ۔ 25 بلاگز پر میں نے اپنا تبصرہ بھی شائع کیا ۔ 2 پر تبصرہ نہ کر سکنے کی وجوہ نیچے درج ہیں ۔ بلاگز کی تفصیل مندرجہ ذیل ہے ۔

http://iftikharajmal.blogspot.com/
http://urdutechnews.blogspot.com/
http://shakirkablog.blogspot.com/
http://harrisbinkhurram.blogspot.com/
http:// urdudaan.blogspot.com/
http://shuaibday.blogspot.com/
http://khawarking.blogspot.com/
http://wisesabre.blogspot.com/
http://urduonline.blogspot.com/
http://pensive-man.blogspot.com/
http://urdujahan.blogspot.com/
http://fahdoracle.blogspot.com/
http://mirzarehan.blogspot.com/
http://asmamirza.blogspot.com/
http://bayaaz.blogspot.com/
http://fimza.blogspot.com/
http://sairaambreen.blogspot.com/
http://kunwal.blogspot.com/
http://apnadera.blogspot.com/
http://auraq.blogspot.com/
http://nahiadil.blogspot.com/
http://simunaqv.blogspot.com/
http://emullah.blogspot.com/
http://pakjour.blogspot.com/
http://asianose.blogspot.com/
http://yadain.blogspot.com/
http://icheeta.blogspot.com/ ۔ ۔ ۔ بلاگ کھُلا ۔ تبصرہ کی جگہ نہیں ہے

http://urdublog.blogspot.com/ ۔ ۔ ۔  بلاگ کھُلا ۔ تبصرہ کا صفحہ نہیں کھُلا

This entry was posted in روز و شب on by .

About افتخار اجمل بھوپال

رہائش ۔ اسلام آباد ۔ پاکستان ۔ ۔ ۔ ریاست جموں کشمیر کے شہر جموں میں پیدا ہوا ۔ پاکستان بننے کے بعد ہجرت پر مجبور کئے گئے تو پاکستان آئے ۔انجنئرنگ کالج لاہور سے بی ایس سی انجنئرنگ پاس کی اور روزی کمانے میں لگ گیا۔ ملازمت کے دوران اللہ نے قومی اہمیت کے کئی منصوبے میرے ہاتھوں تکمیل کو پہنچائے اور کئی ملکوں کی سیر کرائی جہاں کے باشندوں کی عادات کے مطالعہ کا موقع ملا۔ روابط میں "میں جموں کشمیر میں" پر کلِک کر کے پڑھئے میرے اور ریاست جموں کشمیر کے متعلق حقائق جو پہلے آپ کے علم میں شائد ہی آئے ہوں گے ۔ ۔ ۔ دلچسپیاں ۔ مطالعہ ۔ مضمون نویسی ۔ خدمتِ انسانیت ۔ ویب گردی ۔ ۔ ۔ پسندیدہ کُتب ۔ بانگ درا ۔ ضرب کلِیم ۔ بال جبریل ۔ گلستان سعدی ۔ تاریخی کُتب ۔ دینی کتب ۔ سائنسی ریسرچ کی تحریریں ۔ مُہمْات کا حال

8 thoughts on “بلاگ سپاٹ امتحان

  1. Noumaan

    اجمل صاحب ہمارے پاس تو ابھی بھی کوئی بلاگ نہیں کھل رہا۔ یہ کمنٹ بھی میں پروکسی سے بھیج رہا ہو٘۔

  2. اجمل

    نعمان صاحب
    بات دراصل یہ ہے کہ حکومت یا پی ٹی اے کوئی ویب سائٹ خود بلاک نہیں کرتے ۔ اگر کوئی ویب سائٹ بلاک کرنا بھی ہو تو آئی ایس پیز کو لکھتے ہیں ۔ یہی اس سلسلہ میں بھی ہوا ہے ۔ سب آئی ایس پیز نے بلاگ سپاٹ کو بند نہیں کیا ۔ تین دن قبل تک بلاگ سپاٹ کے اپنے سسٹم میں خرابی تھی جو ٹھیک ہو گئی تھی ۔ آپ لوگوں کو چاہیئے کہ اپنے اپنے آئی ایس پیز کو قائل کرنے کی کوشش کریں کہ وہ بلاگ سپاٹ کو بحال کریں یا کم از کم آپ کو وہ چِٹھی دِکھائیں جس پر عمل کرتے ہوئے اُنہوں نے بلاگ سپاٹ کو بلاک کیا ہے ۔ اس طرح آپ صحیح ملزم کو ٹارگیٹ کر سکیں گے اور کامیابی کی اُمید بھی ہو گی ۔

  3. Noumaan

    اجمل صاحب میری آئی ایس پی نے مجھے وہ چٹھی دکھائی ہےؕ۔میں سائبر اور میرا کیبل کنکشن ملٹی نیٹ استعمال کر رہا ہے۔ آپ کونسی آئی ایس پی استعمال کر رہے ہیں؟

  4. میرا پاکستان

    ہماري اطلاع کے مطابق بلاگ سپاٹ کو بند کرنے کا منبع سپريم کورٹ ہے ناکہ حکومت اور اس کي وجہ کارٹون ہيں ناکہ کسي کي حکومت کے خلاف تحرير۔ دراصل ہم نے اس پابندي کو غلط رنگ ديے ديا ہے۔
    سپريم کورٹ نے جو بھي فيصلہ کيا وہ جلد بازي ميں کيا اور اس سے کئ معصوم لوگوں کے حقوق کا بھي استحصال ہوا۔ مگر آپ کے بقول يہ پابندي ختم ہوچکي ہے اور بلاگ سپاٹ کے سارے بلاگ تک رسائي پھر ممکن ہوگئ ہے۔
    احتجاج کرنے والوں کي بھي نيت پر ہميں شک نہيں مگر انہوں نے بھي جلد بازي کا مظاہرہ کرتے ہوۓ واقعہ کو غلط رنگ دينے کي کوشش کي۔ يہي وجہ ہے کہ ہم نے خود کو اس معاملے سے الگ رکھا۔

  5. اجمل

    نعمان صاحب
    مجھے آپ پر یقین ہے ۔ کراچی سے میری بیٹی نے کُچھ دن قبل بتایا تھا کہ ابُو آپ کا بلاگ نہیں کھُل رہا ۔ میں کامسیٹس اور مائیکرونیٹ ڈی ایس ایل استعمال کرتا ہوں ۔ دونوں سے بلاگسپاٹ کھُلتا ہے ۔ میرے بھائی کے پاس پاک نیٹ اور کزن کے پاس کوئی اور ہے ۔ انشاء اللہ آج شام میں اُن کے ہاں جا کر چیک کروں گا ۔ میں بخار کی وجہ سے متحرّک نہیں ہو سکا دوسرے میرے ساتھی ریٹائر ہو چکے ہیں ورنہ اب تک پی ٹی اے میں شور مچ چکا ہوتا ۔

  6. اجمل

    میرا پاکستان صاحب
    سپریم کورٹ کے حکمنامہ کا جب اِجراء ہوا بلاگسپاٹ بند ہو چکا تھا ۔ اگر سپریم کورٹ کے حکم کا اطلاق سمجھا جائے تو درخواستوں میں گوگل کا نام بھی تھا ۔

  7. Attiq-ur-Rehman

    ہمارے ہاں یعنی واہ سے سارے بلاگ کھل رہے ہیں ۔ لیکن آپ کی اس لسٹ میں ایک بلاگ کا رابطہ شامل نہیں ہے ۔میرا اشارہ ہے۔Urduweblogشکریہ۔

  8. اجمل

    عتیق الرّحمٰن صاحب
    شکریہ ۔ آپ نے میرے مؤقف کو تقویت پہنچائی ہے ۔ اُردو ویب لاگ تو میں نے کھولا تھا میری فہرست سے رہ گیا ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

:wink: :twisted: :roll: :oops: :mrgreen: :lol: :idea: :evil: :cry: :arrow: :?: :-| :-x :-o :-P :-D :-? :) :( :!: 8-O 8)