جو ہم چھوڑیں اور غیر اپنائیں

تعجب اور افسوس کی بات ہے کہ مسلمانوں کی جو مشرقی ثقافت تھی اس کو ہم فرسودہ جان کر چھوڑ رہے ہیں اور غیر جو نہ صرف اسلام بلکہ ہر باعمل مسلمان کے دشمن ہیں وہ ہماری ثقافت کے اجزاء پر یکے بعد دیگرے تحقیق کر کے اسے انسانی صحت کے لئے مفید ثابت کر رہے ہیں ۔ اس وقت ذکر صرف معانقہ یعنی بغل گیر ہونے کا ۔ صرف چند دہایاں پہلے جب دو مسلمان عزیز یا دوست ملتے تو بڑے جوش کے ساتھ ایک دوسرے سے معانقہ کرتے یعنی بغلگیر ہوتے اور ان کے چہرے بشاش ہو جاتے ۔ ہماری نام نہاد ترقی کا یہ عالم ہے کہ اب دو عزیز یا دوست ملتے ہیں تو دور ہی سے صرف ایک ہاتھ ایک دوسرے کے کندھے کے پچھلی طرف لگا کر کے سمجھتے ہیں معانقہ ہو گیا ۔ اگر صحیح طرح معانقہ کیا جائے تو جسم میں ایک تازگی آ جاتی ہے ۔ ہم نمعلوم کس وجہ سے یہ چھوٹی چھوٹی صحتمند عادتیں چھوڑتے جارہے ہیں ۔ایک تحقیق کے مطابق بغل گیر ہونے سے صحت زیادہ بہتر رہتی ہے۔ امریکہ کی یونیورسٹی آف نارتھ کیرولائنامیں کی جانے والی تحقیق میں 38 جوڑوں پر بغل گیری کی عادت کے اثرات کا جائزہ لیا گیا۔ تحقیق کے مطابق خوشی یا گرم جوشی سے بغل گیر ہونے سے جسم میں ایک ایسے ہارمون میں اضافہ ہوتا ہے جو بلڈ پریشر کو کم کرتا ہے جس کی بدولت دل کی بیماریوں کے امکانات میں کمی واقع ہوتی ہے۔

اس تحقیق میں پہلے مرحلے میں جوڑوں کو الگ الگ کمروں میں رکھا گیا اور ان کا بلڈ پریشر اور ہارمون کا لیول نوٹ کیا گیا ۔ بعد میں انہیں بیس سیکنڈ تک ایک دوسرے کے ساتھ بغل گیر ہونے کے لئے کہا گیا۔ اس کے بعد ایسے ہارمون میں اضافہ دیکھا گیا جو دل کی بیماریوں میں کمی کا باعث بنتا ہے۔ یہ بھی نوٹ کیا گیا ہے کہ ایسے جوڑے جن کے درمیان ایک خوشگوار اور پیار کا تعلق ہوتا ہے ان میں ایسے ہارمون کا لیول زیادہ ہوتا ہے۔ عمومی طور پر بغل گیری سے خواتین میں مردوں کی نسبت ان ہارمونز کا لیول زیادہ نوٹ کیا گیا ہے۔

This entry was posted in روز و شب on by .

About افتخار اجمل بھوپال

رہائش ۔ اسلام آباد ۔ پاکستان ۔ ۔ ۔ ریاست جموں کشمیر کے شہر جموں میں پیدا ہوا ۔ پاکستان بننے کے بعد ہجرت پر مجبور کئے گئے تو پاکستان آئے ۔انجنئرنگ کالج لاہور سے بی ایس سی انجنئرنگ پاس کی اور روزی کمانے میں لگ گیا۔ ملازمت کے دوران اللہ نے قومی اہمیت کے کئی منصوبے میرے ہاتھوں تکمیل کو پہنچائے اور کئی ملکوں کی سیر کرائی جہاں کے باشندوں کی عادات کے مطالعہ کا موقع ملا۔ روابط میں "میں جموں کشمیر میں" پر کلِک کر کے پڑھئے میرے اور ریاست جموں کشمیر کے متعلق حقائق جو پہلے آپ کے علم میں شائد ہی آئے ہوں گے ۔ ۔ ۔ دلچسپیاں ۔ مطالعہ ۔ مضمون نویسی ۔ خدمتِ انسانیت ۔ ویب گردی ۔ ۔ ۔ پسندیدہ کُتب ۔ بانگ درا ۔ ضرب کلِیم ۔ بال جبریل ۔ گلستان سعدی ۔ تاریخی کُتب ۔ دینی کتب ۔ سائنسی ریسرچ کی تحریریں ۔ مُہمْات کا حال

7 thoughts on “جو ہم چھوڑیں اور غیر اپنائیں

  1. اجمل

    زکریا
    تحقیقات کے لحاظ سے جوڑوں سے مراد مخالف صنف کے جوڑے نہیں ہے بلکہ ہم صنف جوڑے ہے ۔

    شبّیر صاحب
    آپ ٹھیک کہتے ہیں لیکن اس کا سبب غیرفطری ہے ۔

  2. شعیب صفدر

    ٹھیک۔۔۔۔
    ویسے میں نے وضو،نماذ،بیٹھ کر پانی پیبا اور کءی دیگر اسلامی امور کے متعلق بھی ایسی تحقیق پڑھی ہیں نہ معلوم سچی ہیں یا نہیں کیوں کہ ہماری عادت ہے جو انگریز کے منہ سے سنے اسے سچ مانتے ہیں باقی سب جھوٹ۔۔۔۔

  3. اجمل

    شعیب صفدر صاحب
    بیٹھ کر کھانے اور پینے کا تو میرا ذاتی تجربہ ہے کہ معدہ ٹھیک رہتا ہے ۔ وضو اور نماز نہ صرف صحتمند عادت ہے بلکہ ڈسپلن بھی سکھاتے ہیں

  4. زکریا

    Since we might get even more confused while writing in Urdu, here’s the abstract for the paper:

    Subjects were 38 cohabiting couples (38 men, 38 women) aged 20 to 49 years. All underwent 10 minutes of resting baseline alone, 10 minutes of WC together with their partner, and 10 minutes of postcontact rest alone.

    So it was for couples or partners. The research showed that women showed higher hormone levels afterwards than men.

  5. Harris - حارث

    Asalam o alaikum uncle ji,
    i’ll read the posts. i was having some network problems. for details visit my blog.

    i read your mail today, i’ll look into it tonight.. or perhaps tomorrow, cuz im dead tired.

    @animation, i’ll try using the animated avatar pic, but if it doesn’t animate, don’t worry i’ll put a java script code there to put it there whenver you comment.. :).

    Please sign into your blog goto settings.

    SETTINGS>COMMENTS>WORD VERIFICATION.. (i am putting the code in the template. What font will you prefer to use, nafees or urdu web naskh?).

    yours,
    Harris.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

:wink: :twisted: :roll: :oops: :mrgreen: :lol: :idea: :evil: :cry: :arrow: :?: :-| :-x :-o :-P :-D :-? :) :( :!: 8-O 8)